Tuesday, December 07, 2004

تصوّر کرو

دنیا میں ایک نبی آچکا۔ کسی اور کی کیا ضرورت؟

تصوّر کرو کہ کوئی جنّت نہیں
آسان ہے اگر کوشش کرو
دوزخ نہیں ہمارے نیچے
اوپر کھلا آسمان
تصوّر کرو کہ تمام لوگ
آج کے لیے جیتے ہیں۔۔۔

تصوّر کرو کہ کوئی ملک نہیں
نہیں ہے اتنا مشکل
کچھ نہیں مارنے یا مرنے کے لیے
اور نہ ہی کوئی مزہب
تصوّر کرو کہ تمام لوگ
امن سے زندگی گزار رہے ہیں۔۔۔

تم کہو گے کہ میں خواب دیکھتا ہوں
لیکن میں اکیلا نہیں
امّید ہے اِک دن تم ہمارے ساتھ ہو گے
اور دنیا ایک ہو گی

تصوّر کرو کہ کوئی جائداد نہیں
پتہ نہیں کہ تم کر پاؤ
نہیں ضرورت لالچ یا بھوک کی
انسانیت کی ایک برادری
تصوّر کرو کہ سب لوگ
آپس میں دنیا بانٹ رہے ہیں۔۔۔

تم کہو گے کہ میں خواب دیکھتا ہوں
لیکن میں اکیلا نہیں
امّید ہے اِک دن تم ہمارے ساتھ ہو گے
اور دنیا ایک ہو گی

جان لینَن

تبصرے  (2)

Anonymous Anonymous

کلام جس کسی کا بھی ہو مگر پسند ضرور آیا ـ آپ کے دیگر پوسٹ بھی پڑھا، آپ اچھا لکھتے ہیں ـ

والسلام : محمد شعیب http://shuaibday.blogspot.com

12:37 AM  
Blogger ضیا

شکریہ شعیب۔ آپ کا بلاگ بہت عمدہ ہے۔

5:53 PM  

تبصرہ کیجیے

کیفے حقیقت