Thursday, January 06, 2005

سوپرمین کرِپٹَون میں

کافی عرصے سے بلاگ نہیں کر پایا۔ کچھ روز سفر میں گزر گئے (جی ہاں، میں اب ایشیا کے پیرس کراچی میں ہوں!) اور کچھ وقفہ جیٹ لیگ کی نزر ہو گیا۔ اس کے بعد بخار کی باری تھی۔ ویسے تو ڈائل اپ کے ساتھ کاہلی مفت ملتی ہے۔ لیکن آج ہمّت کر کے بلاگ کی طرف نظر اٹھا ہی لی۔

پاکستان میں مقیم بلاگر بہنوں اور بھائیوں سے گستاخی کی معافی چاہتا ہوں لیکن یہاں اردو بلاگر کی موجودگی بالکل ایسی ہے کہ جیسے سوپرمین کرِپٹَون جا پہنچا ہو۔ یا پھر لؤس کی محبّت سے مجبور ہو کر اپنی تمام طاقتیں گوا چکا ہو (جیسا کہ سوپرمین ٹو میں دیکھا گیا)۔ گویا اس میں اور گردا گرد کے لوگوں میں کوئی فرق ہی نہ رہے۔

تبصرے  (3)

Blogger Kunwal

ہی ہی۔ مجھے لگتا ہے اردو بلاگرز انشاءاللہ زیادہ ہوتے جائں گے۔ اور دیکھۓ گا ایک دن سوپرمین بھی کرپٹون پہنچ ہی جاۓ گا۔ ابھی دو تین دن پہلے میں نے کسی کو ای میل میں لکھا تھا کہ بندہ ایک معمولی آلو کے ساتھ عالم گیر نہیں بن سکتا۔ پھر میں نے سوچنے کے بعد لکھا ہاں شاید ہو بھی سکتا ہے۔ اسلۓ ہمیشہ امید رکھنی چاہۓ۔ (ڈگلس ایڈیمس نے کہا تھا کہ بڑے مسئلے صرف آلؤوں کے ساتھ نہیں حل کۓ جاتے)۔

8:02 AM  
Blogger ضیا

بھئی واہ کنول! شکر ہے کوئی تو سوپرمین کے متعلق مزاق کی قدر کرتا (کرتی؟) ہے۔ خدا ڈگلس ایڈمز مرحوم کو جنّت میں جگہ دے۔ موصوف وہاں بھی لوگوں کو ہنسا رہے ہوں گے۔

2:46 PM  
Blogger Kunwal

جہاں تک مجھے معلوم ہے ڈگلس ایڈمز خدا کو نہیں مانتا، تو جنت تو دور کی بات ہے۔
so long, and thanks for all the fish :D
(مجھے اردو میں انگریزی نہیں لکھنی آتی)

8:28 AM  

تبصرہ کیجیے

کیفے حقیقت