Monday, April 18, 2005

اہم اعلان

پڑھنے والوں کے لیے شاید یہ اعلان اتنا اہم نہ ہو لیکن پھر بھی کہتا چلوں۔ اپریل کی چوبیس تاریخ کو ایبی اور میری شادی ہے! اگر آپ اس روز کراچی میں ہوں اور چائے، کافی اور دیگر ٹھنڈے مشروبات کے خواہشمند ہوں تو پرل کونٹِنینٹل ہوٹل چلے آئیں۔ اور سپریم کورٹ کو اپنی دعائوں میں ضرور یاد رکھیں۔

Friday, April 08, 2005

فلمی شاہکار

فلم کا نام ہے آماڈئیس۔ اور سالوں سے یہ میرے ذہن پر چھائی ہوئی ہے۔ میرے نزدیک اس کا مرکزی خیال ہلا دینے والا ہے: ایک معمولی انسان جو اپنی معمولیت کی آگ میں دہک رہا ہے اور اپنا ایمان کھو بیٹھا ہے۔





آماڈئیس کا آخری سِین اس مرکزی خیال کی بہت خوبی سے عکاسی کرتا ہے۔ میں نے یہ سِین اردو میں سبٹائٹل کیا ہے۔ آپ اسے یہاں دیکھ سکتے ہیں۔

انٹرویو میم دویم: سوالات

دانیال، لمبی تاخیر کی معزرت چاہتا ہوں۔ آپ کے لیے سوالات مندرجہ ذیل ہیں۔
  • اپنے بارے میں ہمیں کچھ بتائیے۔ کیا آپ طالبِ علم ہیں یا نوکری پیشہ؟ تعلیم یا نوکری یا دونوں کے بارے میں وضاحت کریے.
  • ۔حال میں آپ نے کونسی کتب پڑھی ہیں؟
  • کیا آپ کے خیال سے پاکستان کو ایک اسلامی مملکت ہونا چاہیے جہاں شریعت نافظ ہو یا ترکی اور دیگر یورپی ممالک کی طرح کی سیکیولر ریاست؟
  • آپ بڑے ہوکر کیا بننا چاہتے ہیں؟ (مجھ سے تو یہ سوال پوچھا ہی نہیں گیا)۔
  • آجکل ٹیری شیاوہ کی کہانی میڈیا میں چھائی ہوئی ہے۔ زندگی اور موت کے حق کے بارے میں آپ کا کیا خیال ہے؟ کیا زندگی کی کوئی مزہبی حیثیت ہے جس کی بنیاد پر اپنی زندگی کو ختم کرنا جرم ہے یا کیا ہر انسان کو حق حاصل ہونا چاہیے کہ بیماری یا کسی اور صورت میں اپنی زندگی ختم کردے؟