Saturday, July 16, 2005

کون سا بہتر ہے؟

اعظمی صاحب کی آج ای۔میل آئی۔ موضوع تھا: کون سا بہتر ہے؟ ترجمہ کچھ یوں ہے۔

کہا جاتا ہے کہ شہزاد تنویر، لندن کا خودکش دہشت گرد، بہت مزہبی تھا۔ اکثر مسجد جایا کرتا تھا۔ اسے لڑکیاں بالکل پسند نہیں تھیں۔

میرا سترہ سالہ بیٹا شہزاد اعظمی بالکل مزہبی نہیں ہے۔ کبھی مسجد نہیں جاتا۔ اسے لڑکیاں بہت پسند ہیں۔

کون سا شہزاد بہتر ہے؟
ظاہر ہے اعظمی صاحب، آپ کا شہزاد بہتر ہے۔ بس اسے مسجد سے دور رکھیے۔

Tuesday, July 12, 2005

اینجِل: سمائل ٹائم

کچھ دنوں پہلے میں نے اینجِل کے آخری سیزن کی قسط سمائل ٹائم دیکھی۔ جو لوگ شو سے ناواقف ہیں، ان کے لیے یہ کہتا چلوں کہ اینجِل بفی دا ویمپائر سلیئر (میرا پسندیدہ شو!) سے منسلک ہے۔ بفی کا سابقہ بوئےفرینڈ، روح رکھنے والا ویمپائر اینجِل، لوس اینجلس (سٹی اوف اینجلز!) میں دکھی انسانیت کی مدد کرتا ہے۔


سمائل ٹائم کی کہانی نہایت مزاحیہ ہے۔ جادو کے ذریعے اینجِل، لمبا چوڑا طاقتور اینجِل، غلطی سے ایک کٹ پتلی میں تبدیل ہو جاتا ہے! چند سین دیکھ کر تو میرا ہنس ہنس کر برا حال ہوگیا۔ ایک سین کا ذکر کرتا چلوں: اینجِل اور بھتنا کٹ پتلا لڑائی میں مصروف ہیں۔ کٹ پتلا اینجِل کو تڑی دیتا ہے :میں تمہیں نیا کٹ پتلی سراخ پھاڑ دوں گا، کتیا! (پورے مزے کے لیے اس فقرے کا انگریزی میں ترجمہ کیجیے۔)

بہرحال نہایت عمدہ قسط تھی۔ اس کو ہیوگو ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

Saturday, July 09, 2005

خطِ نامنظوری

کل مجھے ایک جانا پہچانا خط ملا۔ جس کا ترجمہ کچھ یوں ہے۔

ڈیر مز احمد،

ہمیں اپنا مسوّدہ بھیجنا کا بہت شکریہ۔ مجھے یہ اپنی حالیہ ضروریات کے لیے کچھ ٹھیک نہیں لگا۔

خلوص سے،

سٹینلی شمڈ
مدیر
اس مرتبہ مسٹر شمڈ نے "فارم" خط کا استعمال کیا ہے۔ اسے پڑھنے کے بعد کچھ دیر (یعنی پانچ منٹ کو) میری حالت سالیری جیسی ہوگئی۔ آماڈئیس کے اس سین میں جب وہ اپنا ایمان کھو بیٹھتا ہے۔ اور ایک سلیب کو آگ لگا دیتا ہے۔ ان چند منٹوں کو سٹینلی شمڈ میرے خدا تھے اور مسترد مسوّدہ میری سلیب۔

لیکن پھر جذباتی گھٹا اٹھی۔ سٹینلی شمڈ اب بھی خدا ہیں اور میں نااہل بندہ۔ میری کیا مجال کہ ان سے ناراض ہوں؟ اینالوگ کی جنّت کے لیے کوشش جاری رکھوں گا۔

ویسے تو دا لیفٹ ہینڈ آف ڈارکنس جیسے شاہکار کو ان الفاظ میں رد کیا گیا تھا۔ تمام ناکام اور اناڑی لکھنے والوں کو اس سے تسکین ملتی ہے۔

Friday, July 08, 2005

مختار مائی

ہماری گریجوئیٹ اسمبلی ممبران، بینکار وزیرِ اعظم، اور شہنشاہ صدر سے کہیں زیادہ دلیر اور انسان دوست تو میروالا کی وہ عظیم ہستی ہیں جن پر سارے پاکستان کو فخر کرنا چاہیے۔


میں کہتا ہوں صدرِ پاکستان کاغزی جرنیل کو نہیں، مختار مائی کو ہونا چاہیے۔